Sunday, 23 November 2014

.مقدر آزمانے میں زمانے بیت جاتے ہیں


.مقدر آزمانے میں زمانے بیت جاتے ہیں



.مقدر آزمانے میں زمانے بیت جاتے ہیں
مرادیں دل کی پانے میں زمانے بیت جاتے ہیں
رکھتا کوئی همت اگر اظہارِ الفت کی
زباں پر بات لانے میں زمانے بیت جاتے ہیں
...محبت زندگی میں جو بڑی مشکل سے ملتی ہیں
مگر اس کے نبھانے میں زمانے بیت جاتے ہیں
اگر اک بار آنکھوں میں اچانک آ بسے کوئی
اسے دل سے بھلانے میں زمانے بیت جاتے ہیں
 

0 comments:

Post a Comment